ٹیکنالوجی

200سے زائد زبانوں کا ترجمہ کرنے والے یونیورسل لینگوئج ٹرانسلیٹر کی تیاری میں اہم پیشرفت

[ad_1]

200سے زائد زبانوں کا ترجمہ کرنے والے یونیورسل لینگوئج ٹرانسلیٹر کی تیاری میں …

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ کی ملکیت رکھنے والی کمپنی میٹا نے ایک اوپن سورس آرٹی فیشل انٹیلی جنس (اے آئی) ماڈل تیار کیا ہے جو 200 سے زائد زبانوں کا ترجمہ کرسکتا ہے۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق میٹا کے یونیورسل لینگوئج ٹرانسلیٹر ان زبانوں کا ترجمہ کرے گا جن میں سے بیشتر زبانیں ایسی ہیں جن کو موجودہ ٹرانسلیٹنگ سسٹمز سپورٹ نہیں کرتے،میٹا کے سی ای او مارک زکربرگ نے ایک فیس بک پوسٹ میں بتایا کہ اس پراجیکٹ کو نو لینگوئج لیفٹ بی ہائنڈ (این ایل ایل بی) کا نام دیا گیا ہے اور اے آئی ماڈلنگ تیکنیکس کو اس کے لیے استعمال کیا جارہا ہے، تاکہ فیس بک اور انسٹاگرام صارفین کی زبانوں کا معیاری ترجمہ کیا جاسکے۔

این ایل ایل بی میں ایسی زبانوں پر زیادہ توجہ دی جارہی ہے جو بہت زیادہ معروف نہیں جس کی وجہ سے ان کے حوالے سے اے آئی ماڈلز کے لیے ڈیٹا نہ ہونے کے برابر ہے,میٹا کا تیار کردہ نیا ماڈل اس چیلنج کو مدنظر رکھ کر تیار کیا گیا ہے۔

محققین کے مطابق یہ ماڈل دیگر ماڈلز کے مقابلے میں 40 فیصد زیادہ بہتر کارکردگی دکھا رہا ہے,انہوں نے بتایا کہ یہ تیکنیکس پہلے ہی فیس بک، انسٹاگرام اور وکی پیڈیا میں زبانوں کے ترجمے کے حوالے سے کارکردگی کو بہتر بناچکی ہیں ,اب مزید تحقیق کے لیے میٹا نے تمام تر ڈیٹا اوپن سورس فراہم کردیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامیسائنس اور ٹیکنالوجی



[ad_2]
Source link

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button